“نشہ کرنا جان جوکھوں کا کام ہے اور جویہ کام کرتے ہیں انہیں پھر چتر چالاکیاں بھی سیکھنی پڑتی ہیں ، اگر وہ دوسرے لوگوں کی پیدا کودہ رکاوٹوں کو دور کرنا نہیں سیکھیں گے تو پھر وہ نشہ کر نہیں سکتے اور ایڈکشن میں نشہ روز کرنا پڑتا ہے، انہیں چومکھی لڑائی لڑنا پڑتی ہے” ، ڈاکٹر صداقت علی بتاتے ہیں، ” جب بھی کوئی نشئی سے بات کرتا ہے تو وہ اپنا دفاع کرنے کی بجائے اٹیک کرتا ہے کیونکہ وہ جانتا ہے کہ بہترین دفاع اٹیک میں چھپا ہے۔اگر بیوی شراب کا مسئلہ اٹھائے تو کہتا ہے، تمہارا والد رشوت نہیں لیتا ؟ تمہارا بھائی ادھار کیوں مانگتا ہے؟ بیوی ایک دم پریشان ہو کر دفاع کرنے لگتی ہے اور یہ تہیہ بھی کر لیتی ہے شراب پر بات نہیں کرنی۔” اس وڈیو میں ڈاکٹر صداقت والدین کیلئے بھی ٹپس دیتے ہیں ،”جب آپ نشئی سے مذاکرات کریں تو ہمیشہ لین دین کی بات کریں اور لین دین صرف مادی چیزوں کا نہیں ہوتا ۔ اگر بچے کو روپیہ پیسہ چاہیئے تو والدین کو اطمینان چاہیے کہ ان کا بچہ صحیح پڑھ رہا ہے۔ والدین بچے سے پوچھ سکتے ہیں آپ کو فون یا لیپ ٹاپ چاہیئے توآپ ہمیں کیا دیں گے؟ ضروری نہیں کہ بچہ بھی جواب میں آپ کو کوئی مادی چیز دے، وہ آپ کو فخر دے سکتا ہے-” راہنمائی چاہنا طاقت کی نشانی ہے۔ کمزوری کی نشانی یہ ہے کہ ہمیں رستے کا نہیں پتا، ہم کسی مدد بھی نہیں لیتےاوراپنی منزل پر بھی نہیں پہنچتے۔ یہ ویڈیو دیکھئیے!

For Counselling Appointments:
Lahore: Mr Mohsin Nawaz 03007413639
Karachi: Mr Wakeel Murad 03002155956
Islamabad: Mr Talal Zubair 03345145145
Visit: www.willingways.org

کرسٹل میتھ کےطوفان اور بچاؤ پر ایک اہم وڈیو دیکھیے۔
https://drsadaqat.info/کرسٹل

Please write your comments here:-

Comments